آزاد کشمیردفعہ 144 نافذ، ڈڈیال میدان جنگ بن گیا

اسسٹنٹ کمشنر ڈڈیال، متعدد پولیس اہلکار بھی مظاہرین کے پاس یرغمال،سماہنی میں احتجاج موخر،تتہ پانی میں مکمل شٹرڈوان اور پہیہ جام رہا، کوئی لانگ مارچ کو نہیں روک سکتا ،قائدین

آزاد کشمیردفعہ 144 نافذ، ڈڈیال میدان جنگ بن گیا

ڈڈیال،مظفرآباد،ہٹیاں بالا،سماہنی،کھوئی رٹہ،سہنسہ،تتہ پانی(نمائندگان صدائے چنار) ایکشن کمیٹی ممبران کی گرفتاری کے خلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین پر ڈڈیال انتظامیہ کی جانب سے لاٹھی چارج اور آنسو گیس کا استعمال کیا گیا ۔ انتظامیہ کی غیر ذمہ درای کی وجہ سے ڈڈیال میدان جنگ بن گیا ، درجنوں لوگ زخمی ہو گئے، تین گھنٹے کے وقفے کے ساتھ پولیس نے دوبارہ آنسو گیس کا بے دریغ استعمال شروع کر دیا ۔ عوام شدید مشتعل ہو کر پولیس پر پتھراؤ کرتی رہی ، اسسٹنٹ کمشنر ڈڈیال بھی مظاہرین کے پاس یرغمال ۔ متعدد پولیس والوں کو بھی عوام نے یرغمال بنا لیا ۔ جب تک گرفتار شدگان کو رہا نہیں کیا جاتا کسی کو نہیں چھوڑیں گے ۔ عوام ،حالات کشیدہ ہو گئے۔جوائنٹ عوامی ایکشن کمیٹی کی جانب سے دی جانے والی کال کے بعد آزاد کشمیر بھر سمیت شہر اقتدار میں بھی حالات کشیدہ ہو گئے۔ ممبران جوائنٹ عوامی ایکشن کمیٹی منظر سے غائب جبکہ راجہ ساجد اسحاق گرفتار۔ دیگر کی گرفتاری کے لیے پولیس پوری طرح متحرک۔ دوسری جانب ممبر عوامی جوائنٹ ایکشن کمیٹی شوکت نواز میر نے نامعلوم مقام سے مکمل پہیہ جام شٹر ڈاؤن ہڑتال کی کال دے دی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز عوامی جائنٹ ایکشن کمیٹی کی جانب سے دی گئی احتجاج شٹر ڈاؤن کی کال کے بعد شہر اقتدار مظفرآباد میں حالات شدید کشیدہ ہو گئے۔ رات گئے شوکت نواز میر کے گھر پر پولیس کے چھاپے کے بعد تمام مکاتب فکر نے اظہار مذمت کیا جبکہ پولیس نے تاجر رہنما ساجد اسحاق کو گرفتار کر کے پابند سلاسل کر دیا دیگر ممبران کی گرفتاری کے لیے پولیس چھاپے مار رہی ہے۔ عوامی حلقوں نے شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پرامن احتجاج کو پرتشدد بنانے کے لیے حکومت اور اداروں کی جانب سے کی جانے والی کاروائیاں بھارتی مذموم ایجنڈے کو تقویت پہنچانے کے مترادف ہیں۔ لوگوں کو پرامن احتجاج کی اجازت دے دینی چاہیے۔جموں و کشمیرعوامی جائنٹ ایکشن کمیٹی کے ممبر و صدر انجمن تاجران ہٹیاں بالا سید فیصل گیلانی نے آج جمعہ کے روز سے ضلع بھر کے تمام چھوٹے،بڑے بازاروں میں غیر معینہ مدت تک پہیہ جام اور شٹر ڈاؤن ہڑتال کا اعلان کردیا۔جمعرات کی سہہ پہر ہٹیاں بالا میں تاجروں کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے فیصل گیلانی نے کہا کہ گیارہ مئی کی پرامن ہڑتال و مارچ کی کال تھی جسے پولیس اور انتظامیہ نے ڈوڈیال میں تشدد میں تبدیل کیا جس کے بعد گیارہ مئی کے مارچ سے شروع ہونے والے احتجاج کو ریورس کرتے ہوئے آج جمعہ کے روز سے ہی ضلع جہلم ویلی بھر میں میڈیکل سٹورز،ہوٹلوں سمیت ہر قسم کے تجارتی مراکز بند اور پہیہ جام ہڑتال ہو گی،ریاست کو چائیے کہ وہ تشدد کا راستہ ترک کر کے مل بیٹھ کر تاجروں کے ساتھ معاملات حل کرے،جموں و کشمیر جائنٹ ایکشن کمیٹی کی ہر کال پر لبیک کہیں گے جہلم ویلی کے تاجر مرکز کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں، رہیں گے تاجر اور عوام انتظامیہ کی جانب سے کسی بھی افواء پر یقین نہ کریں۔سب ڈویژن سماہنی میں 9 مئی کی رات کو پولیس کے چھاپے،جموں و کشمیر جوائنٹ عوامی ایکشن کمیٹی کے رہنما و انجمن تاجران کے صدر راجہ عابد اسلم سمیت متعدد رہنماؤں کو پولیس نے گرفتار کر لیا خبر پھیلتے ہی انجمن تاجران، سول سوسائٹی کی بڑی تعداد تجارتی مراکز چوکی، پونا اور جنڈالہ میں جمع ہو گئی اور رہنماؤں کی گرفتاری کے خلاف احتجاج شروع کر دیا بعد ازاں جنڈالہ سے مظاہرین تجارتی مرکز چوکی پہنچ آئے، مظاہرین نے تھانہ پولیس چوکی کے سامنے مین شاہراہ جموں پر احتجاجی کیمپ لگا دیا احتجاجی دھرنا میں انجمن تاجران سمیت سول سوسائٹی کی اعلی شخصیات، نوجوانوں کی بڑی تعداد شریک ہوئی مظاہرین نے گرفتار رہنماوں کی رہائی، عوامی ایکشن کمیٹی کے منشور کے حق میں زبردست نعرہ بازی کی بعدازاں اسسٹنٹ کمشنر سماہنی، ایس ایچ او تھانہ پولیس چوکی سردار سہیل یوسف کی موجودگی میں احتجاجی دھرنا کے نمائندگان سے مذاکرات کئے گئے جس کے بعد احتجاج کو موخر کر دیا گیا۔عوامی ایکشن کمیٹی کے 11 مئی کے لانگ مارچ کو ناکام بنانے کے لیے حکومت کا کریک ڈاؤن گرفتاریوں کا سلسلہ شروع ہو گیا چیئرمین عوامی ایکشن کمیٹی ظفر اقبال غازی اور صدر عابد راجوری کو پولیس نے گرفتار کر لیا جس کے بعد عوامی ایکشن کمیٹی کے دیگر ذمہ دارا ن، تاجروں نے گرفتار یوں کے خلاف میلاد چوک میں دھرنا دیا جس سے خطاب کرتے ہوئے عبدالرحیم بٹ،سفیان غازی، ضیاء غازی،مجیب اکبر،عتیق راجہ،وسیم راجہ،نجیب شاہ، عابد کشمیری و دیگر نے کہا کہ پورے آزاد کشمیر سے عوامی ایکشن کمیٹی کے ذمہ داران کو گرفتار کیا گیا جس کی بھرپور الفاظ میں مزمت کرتے ہیں فی الفور رہا کیا جائے تاریخ گواہ ہے کہ طاقت کے زور سے کسی بھی تحریک کو نہیں دبایا جا سکا 11 مئی کو لانگ مارچ ہر صورت ہو گا پورے کھوئی رٹہ کے عوام کو گرفتار کر لیا جائے پھر بھی کوئی لانگ مارچ کو نہیں روک سکتا اپنے حق لینے سڑکوں پر نکلے ہیں اپنا حق لے کر رہیں گے گرفتاریاں ہمارا راستہ نہیں روک سکتی حکمران عیاشیاں کریں اور عوام بھوکے مریں اب یہ نہیں چلے گا بجلی بلات میں ظلمانہ ٹیکسز کے مکمل خاتمے سمیت تمام مطالبات پورے ہوئے تک لانگ مارچ جاری رہے گا۔آزاد کشمیر عوامی ایکشن کمیٹی کے خلاف حکومت آزاد کشمیر اور انتظامیہ کے ظرف سے گرفتاریوں کے خلاف انجمن تاجران اور عوام سب ڈویژن سہنسہ نے سہنسہ حاجی آباد سہرمنڈی پوٹھ ہولاڑ پلیٹ سیداں کے بازاروں میں مکمل شٹر ڈاؤن اور ہڑتال جاری ہے سب ڈویژن انتظامیہ مع پولیس نفری متحرک ہے اب تک کی اطلاعات کے مطابق سردار راشد نعیم خان راجہ سردار بشارت خان راجہ تنویر سردار عابد مولوی اخلاق آف اٹکورہ کے علاؤہ گرفتاریوں کا سلسلہ جاری ہے پولیس کی بھاری نفری مکمل طور پر گشت کررہی ہے اسسٹنٹ کمشنر بحثیت سب ڈویژنل مجسٹریٹ اپنی انتظامیہ کے ساتھ سہنسہ بازار میں موجود تھے پنڈی کوٹلی روڈ مین روڈز پر تجارتی مراکز کی حدوں میں بند رہی انجمن تاجران اور عوامی ایکشن کمیٹی سہنسہ نے گرفتار لوگوں کی رہائی تک شٹر ڈاؤن رکھنے کے اعلانات کر دیے ہیں ابھی تک کسی ناخوشگوار واقعے کی کوئی اطلاع نہیں اسسٹنٹ کمشنر سہنسہ سہیل بشیر تحصیل دار چوہدری محمد نواز اور نائب تحصیلدار چوہدری علی اعظم حالات کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے پولیس نفری کے ساتھ ساتھ ہیں پنڈی کوٹلی روڈ عام ٹریفک کے لیے کھلی ہے۔مرکزی جوائنٹ عوامی ایکشن کمیٹی آزادکشمیرکی کال پر گیارہ مئی کو بھمبر تا مظفرآباد ہونیوالے احتجاجی مارچ کو روکنے کے لئے حکومت وانتظامیہ متحرک ،عوامی ایکشن کمیٹی تتہ پانی کے رہنمائوں کے گھروں میں رات گئے چھاپے مارے گئے، اور ڈسٹرکٹ کونسلر ملک عبدالرحیم ایڈووکیٹ ، ایازکریم مغل، سردار خضر عباس کو گرفتار کر لیاگیا،دیگر رہنمائوں کی بھی گرفتاری کے لئے پولیس متحرک ہے،عوامی ایکشن کمیٹی تتہ پانی کے رہنمائوں کی گرفتاری پر عوامی حلقوں میں شدید تشویش پیدا ہوگئی اوران کی جانب سے گرفتاری کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔عوامی ایکشن کمیٹی کی کال پر11مئی کو بھمبرتا مظفرآباد احتجاجی مارچ کو روکنے کے لئے رہنماؤں کی گرفتاری کیخلاف زبردست احتجاج،ہزاروں کی تعداد میں شہری باہر نکل آئے،احتجاجی ریلی نکالی گئی،جس نے پورے شہر کا چکرلگایااس دوران شہر کی فضاء حکومت،انتظامیہ مخالف اور عوامی حقوق،گرفتار رہنماؤں کی رہائی کے حق میں نعروں سے گونجتی رہی،جبکہ شہر بھر میں مکمل شٹرڈوان اور پہیہ جام رہا،احتجاجی ریلی میلاد چوک تتہ پانی پہنچ کر بڑے جلسہ میں تبدیل ہوگئی،احتجاجی ریلی،جلسہ سے سردار احسن آفتاب،چیئرمین نوشاد ملک،عبدالوحید چوہدری،خلیل مغل،سید سبط الحسن شاہ،سردار الطاف نے خطاب کیا،مقررین کی جانب سے عوامی ایکشن کمیٹی تتہ پانی کے رہنماؤں ملک عبدالرحیم ایڈووکیٹ،ایاز کریم مغل،سردار خضر عباس سمیت دیگر رہنمائوں وکارکنان کی گرفتاری اور چادروچار دیواری کے تقدس کی پامالی کی پرزورمذمت کی اوران کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا، اس دوران انجمن تاجران ،سول سوسائٹی تتہ پانی نے مرکزی جوائنٹ عوامی ایکشن کمیٹی کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا اور کہاکہ ہم مرکزی جوائنٹ عوامی ایکشن کیساتھ کھڑے ہیں اور آئندہ کے لائحہ عمل کے منتظر ہیںمقررین نے کہاکہ حکومت اور انتظامیہ ہوش کے ناخن لے اور طاقت کے استعمال سے گریز کرئے،عوامی حقوق کی تحریک کی کامیابی تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے،عوامی حقوق کی تحرئک کی کامیابی کے لئے ہرقربانی دیں گئے،انہوں نے کہاکہ حکومت عوام کو بنیادی حقوق دینے سے کیوں قاصر ہے، گیارہ مئی کو دمادم مست قلندر ہوگا،اگر حکومت وانتظامیہ نے تشدد ، لاٹھی چارج کا راستہ اپنایا اوررکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی تو اسے بھرپور جواب دیاجائے گا۔

 

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept