اپریل میں بجلی کے بلوں میں کمی

اپریل میں بجلی کے بلوں میں کمی

 

وفاقی وزیر توانائی سردار اویس خان لغاری نے کہا ہے کہ اپریل کے بجلی کے بلوں میں 3 روپے 82 پیسے فی یونٹ کمی ہوئی، یہ مجموعی کمی ڈالر کے لحاظ سے سہ ماہی اور فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی وجہ سے ہوئی۔

اپنے بیان میں وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ رواں ماہ کے بلوں پر فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ 7 روپے 6 پیسہ فی یونٹ سے کم ہو کر 4 روپے 92 پیسے مقرر ہوئی۔

سردار اویس لغاری نے کہا کہ پہلی سہہ ماہی ایڈجسٹمنٹ 4 روپے 43 پیسے تھی وہ کم ہو کر 2 روپے 75 پیسے ہوگئی ہے۔ بجلی کے بلوں میں ایک روپیہ 68 پیسے کی کمی ہوئی۔

وزیر توانائی نے یہ بھی کہا کہ گزشتہ ماہ کی نسبت رواں ماہ بجلی کے بلوں میں کمی ہوگی، وزیراعظم کی ہدایت ہے کہ عوام کو دباؤ سے بچایا جائے، ہر ممکن ریلیف دیا جائے۔

اویس لغاری کا کہنا تھا کہ نیپرا ہر سال کے آغاز میں پورے سال کے ‘ریفرنس ٹیرف’ کا تعین کرتی ہے، فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ ایک ماہ میں بجلی کی پیداوار پر آنے والی لاگت کا تعین کرتی ہے۔

وزیر توانائی نے کہا کہ نیپرا کی مقررہ قیمت کے مقابلے میں ایندھن کی قیمت میں کمی پر صارفین کےلیے قیمت میں کمی آتی ہے۔

انکا کہنا تھا کہ نیپرا ٹیرف سے قیمت زائد ہونے پر ایندھن کی اصل قیمت اور ایندھن کی مقررہ قیمت کے درمیان فرق کی رقم وصول کی جاتی ہے، اس فرق کو وصول نہ کرنے سے ملکی خسارے میں اضافہ ہوتا ہے۔

وزیر توانائی نے کہا کہ نیپرا ہر ماہ کےلیے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کا تعین کرتی ہے، نیپرا ٹیرف سے قیمت زائد ہونے پر ایندھن کی اصل قیمت اور ایندھن کی مقررہ قیمت کے درمیان فرق کی رقم وصول کی جاتی ہے۔

سردار اویس لغاری کا کہنا تھا کہ اس فرق کو وصول نہ کرنے سے ملکی خسارے میں اضافہ ہوتا ہے، نیپرا ہر ماہ کےلیے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کا تعین کرتی ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ایندھن کی قیمت میں 2 روپے 14 پیسے کی کمی ہوئی ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept