پاکستان کا عالمی عدالت میں فلسطینی علاقوں سے اسرائیلی فوج کے انخلا کا مطالبہ

53 / 100

پاکستان نے عالمی عدالت میں فلسطینی علاقوں سے اسرائیلی فوج کے انخلا کا مطالبہ کردیا

عالمی عدالتِ انصاف میں نگران وزیرِ قانون و انصاف احمد عرفان اسلم نے پاکستان کا مؤقف پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہ عدالت فلسطینیوں کا حقِ خودارادیت تسلیم کر چکی ہے، اسرائیلی فوج کو فوری طور پر فلسطینی علاقوں سے نکل جانا چاہئے۔

عالمی عدالت انصاف میں جمعہ کو فلسطینی علاقوں غزہ، مغربی کنارے اور مشرقی بیت المقدس پر اسرائیل کے 57 سالہ قبضے کے خلاف سماعت ہوئی جس میں پاکستان کی جانب سے دلائل دیے گئے۔

نگران وزیرِ قانون و انصاف احمد عرفان اسلم نے کہا کہ پاکستان سمجھتا ہے کہ دو ریاستی حل سے ہی یہ تنازع ختم ہوسکتا ہے ، فلسطینی اور اسرائیلی ریاستوں کی موجودگی دونوں اکائیوں اور خطے کے امن کی ضمانت ہے۔

عالمی عدالت میں پاکستان کا مؤقف پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ قبضہ ایک غیر قانونی عمل ہے جس کے قانونی نتائج کا سامنا اسرائیل کو کرنا پڑے گا۔

نگران وزیرِ قانون و انصاف احمد عرفان اسلم کا کہنا تھا کہ بیت المقدس تینوں بڑے مذاہب کیلئے مقدس شہر ہے۔مغربی کنارے، غزہ،مشرقی بیت المقدس پر اسرائیلی قبضہ غیرقانونی ہے، اسرائیل فلسطین سے فوری طور پر اپنی فوج نکالے، امید ہے عدالت اس قبضے کے خلاف فیصلہ سنائے گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept