پاک بھارت تجارتی تعلقات کی بحالی پر کوئی ٹھوس تجویز زیر غور نہیں

کہ پاکستان بھارت کے ساتھ تجارتی تعلقات کی بحالی پر سنجیدگی سے غور کرے گا۔

71 / 100

پاک بھارت تجارتی تعلقات کی بحالی پر کوئی ٹھوس تجویز زیر غور نہیں

ذرائع کے مطابق پاکستان اور بھارت کے درمیان تجارتی تعلقات کی بحالی کے حوالے سے اسٹیک ہولڈرز میں کوئی اتفاق رائے نہیں ہے۔

واضح رہے کہ وزیر خارجہ اسحاق ڈار نے گزشتہ روز لندن میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عندیہ دیا کہ پاکستان بھارت کے ساتھ تجارتی تعلقات کی بحالی پر سنجیدگی سے غور کرے گا۔

اگست 2019 میں بھارت کی جانب سے مقبوضہ جموں و کشمیر کی خصوصی خود مختار حیثیت کو منسوخ کرنے کے متنازع اقدام کے بعد سے تجارتی تعلقات معطل ہو گئے تھے۔

پاک بھارت تجارتی تعلقات کی بحالی پر کوئی ٹھوس تجویز زیر غور نہیں

 

یہ بھی پڑھیں  سیکیورٹی فورسز پر حملوں کی منصوبہ بندی،ویڈیو منظرِ عام پر آگئی

مارچ 2021 میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت پابندی ہٹانے کے قریب تھی3

جب کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے بھارت کے ساتھ جزوی طور پر تجارت کھولنے پر اتفاق کیا۔

 

تاہم وفاقی کابینہ نے اس فیصلے کو ویٹو کر دیا جب کچھ اراکین نے اس وقت کے وزیر اعظم عمران خان کو خبردار کیا کہ یہ فیصلہ سیاسی خودکشی ہو گا۔

اس وقت کے آرمی چیف جنرل (ر) قمر جاوید باجوہ کے ماتحت سیکیورٹی اسٹیبلشمنٹ بھارت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے لیے بے چین تھی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept