انتخابات 2024: اب تک 41 آزاد امیدوار، ن لیگ 27، پیپلزپارٹی 21 قومی اسمبلی کی نشستوں پر کامیاب

58 / 100

ملک بھر میں عام انتخابات کے نتائج آنے کا سلسلے جاری ہے، اب تک موصول ہونے والے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق قومی اسمبلی کی 41 نشستوں پر آزاد امیدوار کامیاب ہوئے ہیں، 27 پر ن لیگ، 21 پر پیپلزپارٹی اور 1 نشست پر جے یو آئی کامیاب ہوئی ہے۔

این اے 15:

این اے 15 مانسہرہ کم تورغر کے 545 پولنگ اسٹیشنز میں سے 204 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار شہزادہ محمد گستاسپ خان 39540 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور ن لیگ کے نواز شریف 30312 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 15 پر کلک کریں۔

 

 

این اے 122:

این اے 122 لاہور کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار سردار لطیف کھوسہ 1 لاکھ 17 ہزار 109ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں جبکہ مسلم لیگ ن کے خواجہ سعد رفیق 77ہزار 709ووٹوں سے دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 122 پر کلک کریں۔

این اے 192:

این اے 192 کشمور کم شکارپور کے تمام 273 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پیپلز پارٹی کے میر شبیر علی بجارانی 116000 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے۔

یہاں سے جے یو آئی ف کے محمد ابراہیم جتوئی 75000 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 194:

این اے 194 لاڑکانہ 1 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پیپلز پارٹی کے بلاول بھٹو زرداری نے جے یو آئی ف کے راشد محمود سومرو کو شکست دی ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 194 پر کلک کریں۔

این اے 196:

این اے 196 قمبرشہداد کوٹ کے 303 پولنگ اسٹیشنز میں سے 110 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے بلاول بھٹو زرداری 34015 پہلے اور جے یو آئی ناصر محمود سومرو 13290 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 194 پر کلک کریں۔

این اے207:

این اے207 شہید بینظیر آباد 1 کے 346 پولنگ اسٹیشنز میں سے 268 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے آصف علی زرداری 116561 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر جبکہ آزاد امیدوار شیر محمد رند بلوچ 39074 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 207 پر کلک کریں۔

این اے 227:

این اے 227 دادو 1 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پیپلز پارٹی کے عرفان علی لغاری 104013 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

جی ڈی اے کے لیاقت جتوئی 93956 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

 

مولانا فضل الرحمان کو شکست
حلقہ این اے 44 ڈیرہ اسماعیل خان کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 358 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار علی امین خان گنڈا پور 92612 ووٹ لے کرکامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے جے یو آئی ف کے مولانا فضل الرحمان 59364 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 44 پر کلک کریں۔

این اے 265:

این اے 265 پشین کے 312 پولنگ اسٹیشنز میں سے 32 پولنگ اسٹیشن کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق جے یو آئی کے مولانا فضل الرحمان 5721 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر جبکہ پی کے میپ کے خوشحال خان کاکڑ 3127 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 265 پر کلک کریں۔

جہانگیر ترین ہار گئے
این اے 155 لودھراں 2 کے تمام 369 پولنگ اسٹیشنز کے نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے صدیق خان بلوچ 117671 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

استحکام پاکستان پارٹی کے سربراہ جہانگیر ترین 71128 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 155 پر کلک کریں۔

جہانگیر ترین دوسرے حلقے سے بھی ہار گئے

حلقہ این اے 149 ملتان 2 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام تمام 338 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار ملک محمد عامر ڈوگر 143613 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

یہاں سے استحکام پاکستان پارٹی کے جہانگیر ترین 50166 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 149پر کلک کریں۔

ملتان کے معرکے میں آزاد امیدوار آگے
این اے 148:

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 148 ملتان 1 کے 275 پولنگ اسٹیشنز میں سے 25 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے یوسف رضا گیلانی 4250 ووٹوں کے ساتھ آگے ہیں جبکہ آزاد امیدوار تیمور الطاف ملک 3640 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 148 پر کلک کریں۔

این اے 151:

حلقہ این اے 151 ملتان 4 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 281 پولنگ اسٹیشنز سے پیپلز پارٹی کے سید علی موسیٰ گیلانی 79080 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

ادھر سے آزاد امیدوار مہر بانو قریشی 71649 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 151 پر کلک کریں۔

این اے 152:

این اے 152 ملتان 5 کے تمام 310 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پیپلز پارٹی کے سید عبدالقادر گیلانی 96998 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں اور یہاں سے مسلم ليگ ن کے جاوید علی شاہ 71259 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 64:

این اے 64 گجرات 3 کے 358 پولنگ اسٹیشنز میں سے 30 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ آگیا جس کے مطابق مسلم لیگ ق کے چوہدری سالک حسین 9492 ووٹوں کے ساتھ آگے جبکہ آزاد امیدوار قیصرہ الہٰی 7559 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 64 پر کلک کریں۔

علیم خان لاہور کی اپنی نشست پر آگے
این اے 117:

این اے 117 لاہور 1 کے 329 پولنگ اسٹیشنز میں سے 12 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آئی پی پی کے عبدالعلیم خان 4132 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور آزاد امیدوار علی اعجاز 1819 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 117 پر کلک کریں۔

عون چوہدری لاہور میں اپنی نشست پر پیچھے
این اے 128:

این اے 128 لاہور 12 کے 433 پولنگ اسٹیشنز میں سے 7 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق آزاد امیدوار سلمان اکرم راجہ 2838 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ استحکام پاکستان پارٹی کے عون چوہدری 870 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 128 پر کلک کریں۔

شہباز، مریم اور حمزہ اپنی سیٹوں پر آگے
این اے 118:

حلقہ این اے 118 لاہور 2 کے 467 پولنگ اسٹیشنز میں سے 32 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق مسلم لیگ ن کے حمزہ شہباز 8538 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر جبکہ آزاد امیدوار عالیہ حمزہ ملک 6428 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 118 پر کلک کریں۔

مریم نواز لاہور سے کامیاب
این اے 119 لاہور 3 کے تمام 338 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کی مریم نواز 83855 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئیں۔

اس حلقے سے آزاد امیدوار شہزاد فاروق 68376 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 119 پر کلک کریں۔

این اے 123:

این اے 123 لاہور 7 پر تمام 222 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق ن لیگ کے شہباز شریف 63953 ووٹوں کے ساتھ کامیاب ہوگئے جبکہ آزاد امیدوار افضال عظیم پاہت 48486 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 123 پر کلک کریں۔

این اے 132:

این اے 132 قصور 2 پر 342 پولنگ اسٹیشنز میں سے 114 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق مسلم لیگ ن کے شہباز شریف 53896 ووٹوں کے ساتھ پہلے جبکہ آزاد امیدوار سردار محمد حسین ڈوگر 33920 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 132 پر کلک کریں۔

این اے 127:

این اے 127 لاہور 11 پر 337 پولنگ اسٹیشنز میں سے 103 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق مسلم لیگ ن کے عطااللہ تارڑ 29228 کے ساتھ پہلے جبکہ آزاد امیدوار ملک ظہیر عباس کھوکھر 22650 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 127 پر کلک کریں۔

سندھ میں پیپلز پارٹی کی لیڈ
این اے 190:

این اے 190 جیکب آباد کے 434 پولنگ اسٹیشنز میں سے 121 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے اعجاز جکھرانی 32755 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امیدوار محمد میاں سومرو 14551 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 190 پر کلک کریں۔

این اے 199:

این اے 199 گھوٹکی 2 کے تمام 365 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے علی گوہر مہر 154832 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ جے یو آئی کے عبدالقیوم 40204 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 199 پر کلک کریں۔

این اے 202:

این اے 202 پر 305 پولنگ اسٹیشنز میں سے 223 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کی نفیسہ شاہ 121756 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کے سید غوث علی شاہ 26745 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 202 پر کلک کریں۔

این اے 203:

این اے 203 خیرپور 2 کے تمام 275 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے پیر فضل شاہ 125530 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

ادھر سے جی ڈی اے کے پیر صدر الدین شاہ 96133 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 203 پر کلک کریں۔

این اے 209:

این اے 209 سانگھڑ 1 کے 442 میں سے 205 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پی پی شازیہ مری 82345 ووٹوں کے ساتھ پہلے جبکہ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کی محمد خان جونیجو 53042 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 209 پر کلک کریں۔

این اے 210:

این اے 210 سانگھڑ 2 کے 459 پولنگ اسٹیشنز میں سے 126 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے صلاح الدین جونیجو 45438 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کی سائرہ بانو 16382 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 210 پر کلک کریں۔

این اے 211:

این اے 211 میرپورخاص 1 کے 326 پولنگ اسٹیشنز میں سے 268 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی پیر آفتاب حسین شاہ جیلانی کے 74094 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امیدوار علی نواز شاہ 43032 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 211 پر کلک کریں۔

این اے 215:

این اے 215 تھرپارکر 2 کے 401 پولنگ اسٹیشنز میں سے 250 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے مہیش کمار ملانی 105449ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کے ارباب غلام رحیم 86500 ووٹوں کےساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 215 پر کلک کریں۔

این اے 216:

این اے 216 مٹیاری کے تمام 320 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے مخدوم جمیل الزماں 124536 ووٹوں کے ساتھ کامیاب رہے جبکہ ن لیگ کے بشیر میمن 80436 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 216 پر کلک کریں۔

این اے 218:

این اے 218 حیدرآباد 1 کے تمام 240 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پیپلز پارٹی کے سید حسین طارق 108597 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ آزاد امیدوار محمد رضوان 7942 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 222 بدین:

حلقہ این اے 222 بدین 1 کے تمام 338 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی نتائج کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے میر غلام علی تالپور 113916 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کے میر حسین بخش تالپور 67010 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 229:

کراچی میں حلقہ این اے 229 ملیر 1 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 184 پولنگ اسٹیشنز سے پاکستان پیپلز پارٹی کے جام عبدالکریم بجار 55732 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے پاکستان مسلم ليگ ن کے قادر بخش 21841 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 229 پر کلک کریں۔

این اے 230:

این اے 230 ملیر 2 کے تمام 163 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پی پی کے آغا رفیع اللّٰہ 32072 ووٹوں کے ساتھ کامیاب رہے جبکہ آزاد امیدوار مسرور سیال 24200 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 230 پر کلک کریں۔

این اے 231:

این اے 231 ملیر 3 کے 215 پولنگ اسٹیشنز میں سے 41 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق پی پی کے عبدالحکیم بلوچ 12609 ووٹوں کے ساتھ پہلے جبکہ آزاد امیدوار خالد محمود علی 9041 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 231 پر کلک کریں۔

این اے 232:

این اے 232 کراچی کورنگی 1 کے تمام 270 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی آسیہ اسحاق صدیقی 88260 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئیں۔

یہاں سے آزاد امیدوار عدیل احمد 66574 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 232 پر کلک کریں۔

این اے 238:

این اے 238 کراچی ایسٹ 4 کے 292 پولنگ اسٹیشنز میں سے 57 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار حلیم عادل شیخ 16868 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ جماعت اسلامی کے سیف الدین 5873 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 238 پر کلک کریں۔

این اے 239:

این اے 239 کراچی ساؤتھ 1 کے 181 پولنگ اسٹیشنز میں سے 37 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق پی پی کے نبیل احمد گبول 11154 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور آزاد امیدوار محمد یاسر 7055 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 239 پر کلک کریں۔

این اے 241:

این اے 241 کراچی ساؤتھ 3 کے 234 پولنگ اسٹیشنز میں سے ایک پولنگ اسٹیشن کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار خرم شیرزمان 371 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور جماعت اسلامی کے نوید علی بیگ 34 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 241 پر کلک کریں۔

این اے 242:

این اے 242 کراچی کیماڑی 1 کے 125 پولنگ اسٹیشنز میں سے 40 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امید وار دوا خان صابر 7734 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور پی پی کے عبدالقادر مندوخیل 5551 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 242 پر کلک کریں۔

این اے 243:

حلقہ این اے 243 کراچی کیماڑی 2 کے 310 پولنگ اسٹیشنز میں سے 103 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار شجاعت علی 23423 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ پیپلز پارٹی کے عبدالقادر پٹیل 12223 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 243 پر کلک کریں۔

این اے 244:

این اے 244 کراچی ویسٹ 1 کے 129 پولنگ اسٹیشنز میں سے 11 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار آفتاب جہانگیر 1910 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور ایم کیو ایم پاکستان کے ڈاکٹر فاروق ستار 850 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 244 پر کلک کریں۔

این اے 245:

این اے 245 کراچی ویسٹ 2 کے 256 پولنگ اسٹیشنز میں سے ایک پولنگ اسٹیشن کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے سید حفیظ الدین 170 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور آزاد امید وار عطااللہ 119 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 245 پر کلک کریں۔

این اے 246:

این اے 246 کراچی ویسٹ 3 کے 291 پولنگ اسٹیشنز میں سے 17 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار ملک محمد عارف اعوان 2969 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور جماعت اسلامی کے حافظ نعیم الرحمان 1358 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 246 پر کلک کریں۔

این اے 247:

این اے 247 کراچی سینٹرل 1 کے 267 پولنگ اسٹیشنز میں سے 37 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار سید عباس حسنین 9852 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر جبکہ جماعت اسلامی کے منعم ظفر خان 3664 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 247 پر کلک کریں۔

این اے 248:

این اے 248 کراچی سینٹرل 2 کے 361 پولنگ اسٹیشنز میں سے 3 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے خالد مقبول صدیقی 859 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور آزاد امیدوار ارسلان خالد 569 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 248 پر کلک کریں۔

این اے 249 :

این اے 249 کراچی سینٹرل 3 کے 320 پولنگ اسٹیشنز میں سے ایک پولنگ اسٹیشن کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے احمد سلیم صدیقی 370 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور جماعت اسلامی کے امیدوار مسلم پرویز 70 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 249 پر کلک کریں۔

این اے 250:

این اے 250 کراچی سینٹرل 4 کے 307 پولنگ اسٹیشنز میں سے 5 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق آزاد امیدوار محإد ریاض حیدر 1636 کے ساتھ پہلے نمبر پر جبکہ جماعت اسلامی کے حافظ نعیم الرحمان 689 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 250 پر کلک کریں۔

خیبر پختونخوا میں آزاد آگے
این اے 1:

حلقہ این اے 1 سوات چترال اپر کم لوئر کے 312 پولنگ اسٹیشنز میں سے 97 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار عبدالطیف نے 25310 ووٹ لے کر پہلے نمبر ہیں جبکہ جے یو آئی کے طلحہ محمود 20061 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 1 پر کلک کریں۔

این اے 2:

حلقہ این اے 2 سوات 1 کے 341 پولنگ اسٹیشنز میں سے 202 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق آزاد امیدوار امجد علی خان 49760 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ پاکستان مسلم ليگ ن کے امیر مقام 30860 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 2 پر کلک کریں۔

این اے 5 دیربالا:

این اے 5 دیربالا کے تمام 421 پولنگ اسٹیشنز کے غیرسرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار صاحبزادہ صبغت اللّٰہ 90865 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے جماعت اسلامی پاکستان کے صاحبزادہ طارق اللّٰہ 48246 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 6:

این اے 6 لوئر دیر 1 کے 307 پولنگ اسٹیشنز میں سے 2 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امید وار محمد بشیر خان 2507 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر جبکہ جماعت اسلامی کے سراج الحق 1737 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 6 پر کلک کریں۔

بیرسٹر گوہر کامیاب ہوگئے
حلقہ این اے 10 کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 397 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار گوہر علی خان 110023 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

اس حلقے سے عوامی نیشنل پارٹی کے عبدالرؤف 30302 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 10 پر کلک کریں۔

این اے 11:

این اے 11 شانگلہ کے 350 پولنگ اسٹیشنز میں 108 پولنگ اسٹیشنز کا نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار سید فرین 27374 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور ن لیگ کے امیر مقام 18432 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 11 پر کلک کریں۔

این اے 16:

این اے 16 ایبٹ آباد 1 کے 464 پولنگ اسٹیشنز میں سے 12 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق ن لیگ کے مرتضیٰ جاوید عباسی 2164 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور آزاد امیدوار علی اصغر خان 1961 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 16 پر کلک کریں۔

این اے 18:

این اے 18 ہری پور کے 604 پولنگ اسٹیشنز میں سے 302 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار عمر ایوب 103175 ووٹوں کے ساتھ پہلے جبکہ ن لیگ کے بابر نواز خان 58150 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 18 پر کلک کریں۔

این اے 25:

این اے 25 چارسدہ 2 کے تمام 392 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار فضل محمد خان 100713 ووٹوں کے ساتھ کامیاب ہوگئے جبکہ اے این پی کے ایمل ولی خان 67876 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 25 پر کلک کریں۔

این اے 30:

این اے 30 پشاور 3 کے تمام 267 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امید وار شاندانہ گلزار 78971 ووٹ لےکر کامیاب ہوگئیں جبکہ جے یو آئی کے ناصر خان 20950 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 30 پر کلک کریں۔

این اے 32:

حلقہ این اے 32 پشاور 5 کے تمام 301 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار آصف خان 50217 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

ہیاں سے عوامی نیشنل پارٹی کے غلام احمد بلور 28145 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 34:

این اے 34 نوشہرہ 2 کے تمام 309 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار ذوالفقار علی 95652 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

ادھر سے پی ٹی آئی پارلیمنٹیرین کے عمران خٹک 32698 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 41:

این اے 41 لکی مروت کے 409 پولنگ اسٹیشنز میں سے 47 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار سلیم سیف اللہ خان 12335 ووٹوں کے ساتھ آگے اور آزاد امیدوار شیر افضل خان مروت 10597 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 41 پر کلک کریں۔

این اے 43:

این اے 43 پر ایک پولنگ اسٹینشن کے نتیجے کے مطابق داور خان کنڈی 701 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر دوسرے نمبر جے یو آئی کے اسد محمود 550 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 43 پر کلک کریں۔

این اے 46:

این اے 46 اسلام آباد 1 کے تمام 342 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پاکستان مسلم ليگ ن کے انجم عقيل خان 81958 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ آزاد امیدوار عامر مسعود مغل 44317 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 46 پر کلک کریں۔

این اے 47:

این اے 47 اسلام آباد 2 کے 387 پولنگ اسٹیشنز میں سے 165 پولنگ اسٹیشنز کا نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار شعیب شاہین 46307 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ پاکستان مسلم ليگ ن کے طارق فضل چوہدری 19536 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 47 پر کلک کریں۔

این اے 48:

این اے 48 اسلام آباد 3 پر 261 پولنگ اسٹیشنز میں سے 81 پولنگ اسٹیشن کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار سید محمد علی بخاری 23774 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امیدوار راجہ خرم شہزاد نواز 9348 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 48 پر کلک کریں۔

ٹی ایل پی کے سعد پیچھے
این اے 50:

این اے 50 اٹک 2 کے 556 پولنگ اسٹیشنز میں سے 79 پولنگ اسٹیشن کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار ایمان وسیم 17799 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ ٹی ایل پی حافظ محمد سعد 15899 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 50 پر کلک کریں۔

پنجاب کی صورتحال
این اے 52:

این اے 52 راولپنڈی کم مری کے 541 پولنگ اسٹیشنز میں سے 110 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجہ آگیا جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے راجہ پرویز اشرف 23959 ووٹوں کے ساتھ پہلے جبکہ آزاد امیدوار راجہ طارق عزیز بھٹی 18880 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 54:

این اے 54 راولپنڈی 3 کے تمام 344 پولنگ اسٹیشنز میں سے 112 پولنگ اسٹیشن کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد عذا مسعود 88850 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر رہیں جبکہ آزاد امیدوار عقیل ملک 38995 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

نوٹ: اس حلقے کے مزید امیدواروں کے نتائج جاننے کیلئے این اے 54 پر کلک کریں۔

این اے 55:

این اے 55 راولپنڈی 4 کے تمام 311 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق مسلم ليگ ن کے ملک ابرار احمد 78542 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ آزاد امیدوار محمد بشارت راجہ 67101 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 58:

این اے 58 چکوال کے تمام 459 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجہ آگیا جس کے مطابق مسلم لیگ ن کے میجر (ر) طاہر اقبال 115974 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ امیدوار ایاز امیر 102537 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 59:

این اے 59 تلہ گنگ کم چکوال کے تمام 467 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجہ آگیا جس کے مطابق مسلم لیگ ن کے سردار غلام عباس 141680 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ آزاد امیدوار رومان احمد 129716 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے

این اے 71:

این اے 71 سیالکوٹ 2 کے 358 پولنگ اسٹیشنز میں سے 62 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق ن لیگ کے خواجہ محمد آصف 16145 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر جبکہ آزاد امیدوار ریحانہ امتیاز ڈار 11311 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 76:

این اے 76 نارووال 2 کے 414 پولنگ اسٹیشنز میں سے 13 پولنگ اسٹیشز کا غیر حتمی و غیر سرکار نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق ن لیگ کے احسن اقبال 4864 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امید وار جاوید صفدر خلوں 2135 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 108:

این اے 108 جھنگ 1 کے 458 پولنگ اسٹیشنز میں سے 16 پولنگ اسٹیشز کا غیر حتمی و غیر سرکار نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق ن لیگ کے فیصل صالح حیات 7899 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امیدوار صاحبزادہ محمد محمود سلطان 5788 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 109:

این اے 109 جھنگ 2 کے تمام 499 پولنگ اسٹیشنز کے غیرسرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار وقاص اکرم 176586 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

ادھر سے پاکستان مسلم ليگ ن کے محمد یعقوب شیخ 61787 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 114:

این اے 114 شیخوپورہ 2 کے تمام 301 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے رانا تنویر حسین 101322 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

آزاد امیدوار ارشد محمود منڈا اس نشست سے 82304 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 115:

این اے 115 شیخوپورہ 3 کے 354 پولنگ اسٹیشنز میں سے 294 پولنگ اسٹیشز کا غیر حتمی و غیر سرکار نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق آزاد امیدوار خرم شہزاد ورک 105507 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ ن لیگ کے جاوید لطیف 71919 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 120:

این اے 120 لاہور 4 پر 229 پولنگ اسٹیشنز میں سے 17 پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق مسلم لیگ ن کے سردار ایاز صادق 9353 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر جبکہ آزاد امیدوار عثمان حمزہ 4701 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 121:

این اے 121 لاہور 5 پر تمام پولنگ اسٹیشنز کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے آزاد امیدوار وسیم قادر 78803 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے جبکہ مسلم لیگ ن کے روحیل اصغر 70597 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 124:

این اے 124 لاہور 8 کے تمام 198 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے رانا مبشر اقبال 55387 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں

یہاں سے آزاد امیدوار رانا ضمیر احمد جھیڈو 43594 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 125:

این اے 125 لاہور 9 پر 214 پولنگ اسٹیشنز میں سے 12 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق ن لیگ کے محمد افضل کھوکھر 6007 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امیدوار جاوید عمر 3645 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 126:

این اے 126 لاہور 10 پر223 پولنگ اسٹیشنز میں سے 5 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق ن لیگ کے ملک سیف الملک کھوکھر 4032 ووٹوں کے ساتھ پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امیدوار ملک توقیر عباس کھوکھر 4001 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 129:

این اے 128 لاہور 13 کے 334 پولنگ اسٹیشنز میں سے 12 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق ن لیگ کے حافظ نعمان 5661 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امیدوار میاں محمد اظہر 4981 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 135:

این اے 135 اوکاڑہ 1 کے تمام 370 پولنگ اسٹیشنز کا غیرحتمی غیرسرکاری نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے ندیم عباس ربیرہ 107862 ووٹ لےکر کامیاب ہوگئے۔ آزاد امیدوار ملک محمد اکرم بھٹی 90443 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 160:

این اے 160 بہاولنگر 1 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 316 پولنگ اسٹیشنز سے مسلم ليگ ن کے محمد عبدالغفار وٹو 116854 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

آزاد امیدوار سید محمد اصغر اس نشست پر 110335 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 166:

این اے 166 بہاولپور کے تمام 294 پولنگ اسٹیشنز کے نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے سمیع الحسن گیلانی 62148 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

اس نشست پر آزاد امیدوار پرنس بہاول عباس 48599 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 258:

این اے 258 پر ایک پولنگ اسٹیشن کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجے کے مطابق نیشنل پارٹی کے پلائیں 99 ووٹوں کے ساتھ پہلے اور ن لیگ کے میر اسلم بلیدی 89 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 259:

این اے 259 کیچ کم گوادر کے 272 پولنگ اسٹیشنز میں سے 2 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق نیشنل پارٹی کے ڈاکٹر عبدالمالک 80 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ آزاد امیدوار یعقوب بزنجو 17 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 263:

این اے 263 کوئٹہ 2 کے 382 پولنگ اسٹیشنز میں سے 18 کا غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ سامنے آگیا جس کے مطابق آزاد امیدوار سالار خان کاکڑ 1569 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے محمود خان اچکزئی 606 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 28:

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 28 پشاور 1 کے غیرحتمی و غیر سرکاری نتیجے کے مطابق جے یو آئی ف کے نور عالم خان 138389 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں جبکہ آزاد امیدوار ساجد نواز 65119 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 36:

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 36 ہنگو کم اورکزئی کے 386 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار یوسف خان 73076 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

اس حلقے سے جے یو آئی ف کے عبید اللّٰہ 34324 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر آئے ہیں۔

این اے 22:

حلقہ این اے 22 مردان 2 سے بھی مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ موصول ہوگیا ہے جس کے مطابق 387 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار محمد عاطف 114748 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

ان کے مقابلے میں عوامی نیشنل پارٹی کے امیر حیدر اعظم خان ہوتی 66159 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 57:

حلقہ این اے 57 راولپنڈی 6 کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 326 پولنگ اسٹیشنز سے پاکستان مسلم ليگ ن کے دانیال چوہدری 83331 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ آزاد امیدوار سیمابیہ طاہر 56789 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہی ہیں۔

پرویز خٹک قومی اور صوبائی اسمبلی کی نشستیں ہار گئے
حلقہ این اے 33 نوشہرہ 1 کے مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار سید شاہ احد علی شاہ 90145 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں اور یہاں سے پاکستان تحریک انصاف پارلیمنٹیرین کے پرویز خٹک 25582 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 4 سوات:

غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق 346 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار سہیل سلطان 88009 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے محمد سلیم خان 20890 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 182:

غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق حلقہ این اے 182 لیہ 2 سے آزاد امیدوار اویس حیدر جھکڑ 109751 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں جبکہ پاکستان مسلم ليگ ن کے محمد ثقلین بخاری 78006 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 140:

این اے 140 پاکپتن 2 کے تمام 461 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے رانا ارادت شریف خان 139322 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

اس نشست پر آزاد امیدوار راجہ طالع سعید 104762 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 143:

این اے 143 ساہیوال 3 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 442 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار رائے حسن نواز خان 147147 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے آزاد امیدوار محمد طفیل 83480 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 144:

حلقہ این اے 144 خانیوال 1 کے مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق 348 پولنگ اسٹیشنز سے 348 آزاد امیدوار محمد رضا حیات ہراج 118999 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں جبکہ آزاد امیدوار سید عابد حسین 78296 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 225:

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 225 ٹھٹھہ کے مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق 425 پولنگ اسٹیشنز سے پاکستان پیپلز پارٹی کے صادق علی میمن 140773 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

پاکستان مسلم ليگ ن کے رسول بخش جاکھرو 28899 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 23:

حلقہ این اے 23 مردان 3 کے تمام 317 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار علی محمد خان 102175 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے عوامی نیشنل پارٹی کے احمد خان بہادر 33910 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 113:

حلقہ این اے 113 شیخوپورہ 1 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق 362 پولنگ اسٹیشنز سے پاکستان مسلم ليگ ن کے احمد عتیق انور 119407 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

یہاں سے آزاد امیدوار راحت امان اللّٰہ 90877 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 4:

حلقہ این اے 4 سوات 3 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 346 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار سہیل سلطان 88009 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

ادھر سے اے این پی کے محمد سلیم خان 20890 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 26:

حلقہ این اے 26 مہمند کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 195 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار ساجد خان 40985 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں جبکہ جے یو آئی ف کے محمد عارف 20209 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 81:

حلقہ این اے 81 گوجرانوالہ 5 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 338 پولنگ اسٹیشنز سے آزاد امیدوار چوہدری بلال اعجاز 113558 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

ادھر سے مسلم ليگ ن کے اظہر قیوم ناہرا 95479 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 82:

این اے 82 سرگودھا 1 کے تمام 360 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے مختار احمد ملک 108714 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

ان کے مدمقابل پیپلز پارٹی کے نديم افضل گوندل 87349 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 141:

حلقہ این اے 141 ساہیوال 1 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق تمام 430 پولنگ اسٹیشنز سے مسلم ليگ ن کے عمران احمد شاہ 118240 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ آزادا امیدوار رانا عامر شہزاد طاہر 107056 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 157:

این اے 157 وہاڑی 2 کے تمام 336 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پاکستان مسلم ليگ ن کے سید ساجد مہدی 99332 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے آزاد امیدوار سبین صفدر نے 79996 ووٹ حاصل کیے ہیں۔

این اے 49:

این اے 49 اٹک 1 کے تمام 461 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پاکستان مسلم ليگ ن کے شيخ آفتاب احمد 119727 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں۔

یہاں سے آزاد امیدوار طاہر صادق 110230 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 9 مالاکنڈ:

این اے 9 مالاکنڈ کے تمام 348 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار جنید اکبر 113513 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے پیپلز پارٹی کے سید احمد علی 40740 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 105:

این اے 105 ٹوبہ ٹیک سنگھ 1 کے تمام 395 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار اسامہ حمزہ 138194 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ مسلم ليگ ن کے خالد جاوید وڑائچ 107840 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 187:

این اے 187 راجن پور 1 کے تمام 237 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پاکستان مسلم ليگ ن کے عمار احمد خان لغاری 75694 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر آئے جبکہ آزاد امیدوار عاطف علی خان دریشک 65397 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

نواز شریف کامیاب

حلقہ این اے 130 لاہور 14 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق 376 پولنگ اسٹیشنز پاکستان مسلم ليگ ن کے محمد نواز شریف 171024 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے۔

یہاں سے پی ٹی آئی کی حمایت یافتہ آزاد امیدوار یاسمین راشد 115043 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 90:

این اے 90 میانوالی 2 کے تمام 369 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار عمیر خان نیازی 179820 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ پاکستان مسلم ليگ ن کے محمد حمیر خان نیازی 51223 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 21:

این اے 21 مردان 1 کے تمام 351 پولنگ اسٹیشنز کے غیرسرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار مجاہد علی 116049 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

ادھر سے جے یو آئی ف کے اعظم خان 60373 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 133:

این اے 133 قصور 3 کے تمام 407 پولنگ اسٹیشنز کے غیرسرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار عظیم الدین زاہد لکھوی 112726 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ مسلم ليگ ن کے رانا محمد اسحاق خان 96023 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 13:

حلقہ این اے 13 بٹگرام کے تمام 278 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار محمد نواز خان 32164 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

ادھر سے جے یو آئی ف کے محمد یوسف 21291 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 177:

این اے 177 مظفرگڑھ 3 کے تمام 285 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار محمد معظم علی خان 113662 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے پاکستان مسلم ليگ ن کی سیدہ شہربانو بخاری 67964 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہیں۔

این اے 178:

این اے 178 مظفرگڑھ 4 کے تمام 281 پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پاکستان مسلم ليگ ن کے عامر طلال گوپانگ 113816 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں۔

یہاں سے آزاد امیدوار عبدالقیوم خان جتوئی 87932 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

جنگ کی ویب سائٹ پر الیکشن 2024 کے مکمل نتائج دیکھنے کا طریقہ
اگر آپ جنگ کی ویب سائٹ پر پاکستان کے 2024 کے انتخابی نتائج دیکھنا چاہتے ہیں تو جنگ الیکشن پورٹل اور جنگ ویب سائٹ پر کلک کریں۔

اگر آپ یوٹیوب پر لائیو اپ ڈیٹس دیکھنا چاہتے ہیں تو انتخابی نتائج کے بارے میں جاننے کے لیے بہترین جگہ جیو نیوز یوٹیوب ہے۔

اس کے علاوہ لائیو انتخابی نتائج اور دیگر متعلقہ اپ ڈیٹس کے لیے جیو نیوز اینڈرائیڈ موبائل ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرسکتے ہیں۔

ووٹنگ کا عمل
پاکستان میں عام انتخابات کے لیے ووٹنگ صبح 8 سے شام 5 بجے تک جاری رہا، پولنگ اسٹیشنز پر انتخابی عملے نے ذمے داریاں سنبھالیں، پولنگ ایجنٹس کو خالی بیلٹ باکس دکھا کر سیل کر دیے گئے، ووٹرز پولنگ اسٹیشن پہنچے۔

ترجمان الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے مطابق پولنگ کا وقت ختم ہونے کے باوجود پولنگ اسٹیشن میں موجود افراد نے اپنا ووٹ کاسٹ کیا۔

مختلف حلقوں میں جھگڑے، تشدد، فائرنگ سے متعدد افراد زخمی ہوئے اور کچھ حلقوں میں پولنگ کا عمل ہی روک دیا گیا۔

16 ہزار 766 پولنگ اسٹیشن انتہائی حساس قرار
ملک بھر میں 16 ہزار 766 پولنگ اسٹیشن انتہائی حساس قرار دیے گئے، حساس ترین پولنگ اسٹیشنوں کے باہر فوج تعینات کی گئی۔

پنجاب میں 5 ہزار 624 پولنگ اسٹیشن حساس ترین قرار دیے گئے جن پر فی پولنگ اسٹیشن پر 5 اہلکار موجود تھے جبکہ سندھ میں 4 ہزار 430 پولنگ اسٹیشن انتہائی حساس قرار دیے گئے، یہاں فی پولنگ اسٹیشن پر 8 اہلکار تعینات کیے گئے۔

خیبر پختونخوا میں 4 ہزار 265 حساس ترین پولنگ اسٹیشنز پر 9 اہلکار فی پولنگ اسٹیشن پر تعینات کیے گئے جبکہ بلوچستان میں 1047 انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنوں میں ہر پولنگ اسٹیشن پر 9 اہلکار تعینات کیے گئے۔

ووٹ کاسٹ کرنیکی ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہونے لگیں

الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی جاتی رہی جہاں ووٹ کاسٹ کرنے کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل بھی ہوئیں۔

صوبائی حلقہ 112 میں ووٹر کی ووٹ کاسٹ کرنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی، ووٹر نے پولنگ بوتھ میں ووٹ ڈالنے کی مکمل ویڈیو موبائل فون پر بنائی تھی۔

علاوہ ازیں دیگر ووٹرز بھی ووٹ کاسٹ کر کے موبائل سے تصاویر لے کر سوشل میڈیا پر وائرل کر رہے ہیں۔

ووٹرز موبائل فون سمیت ووٹ کاسٹ کرنے پولنگ اسٹیشن جا رہے ہیں۔

ملک بھر میں موبائل فون سروس عارضی طور پر معطل
عام انتخابات کے سلسلے میں ملک بھر میں موبائل فون سروس عارضی طور پر معطل کردی گئی۔

ترجمان وزارت داخلہ کا کہنا تھا کہ ملک میں دہشت گردی کے حالیہ واقعات میں قیمتی جانوں کا ضیاع ہوا ہے۔ امن و امان قائم رکھنے، ممکنہ خطرات سے نمٹنے کے لیے حفاظتی اقدامات ضروری ہیں۔

کتنی قومی اور صوبائی نشستوں پر پولنگ ہوئی؟
اسلام آباد سے قومی اسمبلی کی 3 نشستوں پر ووٹ ڈالے جائیں گے جبکہ پنجاب سے قومی اسمبلی کی 141 اور صوبائی کی 297 نشستوں پر ووٹ ڈالے جائیں گے۔

انٹرنیٹ سے زیادہ اہم ووٹ ڈالنا ہے، سربراہ کامن ویلتھ مبصر گروپ

سندھ سے قومی اسمبلی کی 61 اور صوبائی کی 130، خیبرپختونخوا سے قومی اسمبلی کی 45 اور صوبائی کی 115 جبکہ بلوچستان سے قومی اسمبلی کی 16 اور صوبائی اسمبلی کی 51 نشستوں پر پولنگ ہو گی۔

الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے لیے 26 کروڑ بیلٹ پیپر چھاپے ہیں اور الیکشن کے دن ملک بھر میں عام تعطیل کا اعلان کیا گیا ہے۔

سیکیورٹی فورسز کے 5 لاکھ اہلکار سیکیورٹی کی ذمے داری سنبھالیں گے، پولیس پہلے درجے پر، پھر پیرا ملٹری فورسز اور آخری درجے میں پاک فوج بطور کوئیک رسپانس فورس ذمے داری نبھائے گی۔

پولنگ اسٹیشن پر امن و امان کی صورتِ حال کنٹرول کرنے کے لیے پریزائیڈنگ افسران کو مجسٹریٹ درجہ اول کے اختیارات تقویض کیے گئے ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept