جماعت اسلامی کا حکومت سازی کیلئے پی ٹی آئی سے تعاون سے انکار

55 / 100

جماعت اسلامی کا حکومت سازی کیلئے پی ٹی آئی سے تعاون سے انکار

 

جماعت اسلامی نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے ساتھ محض خیبرپختونخوا میں حکومت سازی کے لیے تعاون کرنے سے انکار کر دیا۔

 

جماعت اسلامی نے پی ٹی آئی سے اتحاد کے حوالے سے ابتدائی مشاورت مکمل کرلی، جس کے بعد جماعت اسلامی نے پی ٹی آئی سے اتحاد کرنے سے انکار کردیا۔

 

ترجمان جماعت اسلامی قیصر شریف کے مطابق پارٹی نے حتمی فیصلہ کیا ہے کہ پی ٹی آئی کے ساتھ تعاون نہیں کر سکتے ، پی ٹی آئی نے وفاقی سطح پر کسی اور جماعت کے ساتھ اتحاد کیا، صرف خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی سے اتحاد کا کوئی جواز نہیں ہے۔

 

قیصر شریف نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی سے بات چیت دونوں وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے متعلق تھی۔ تحریک انصاف نے اپنے مؤقف کو تبدیل کیا ہے، وہ کے پی میں بھی جس سے چاہیں اپنے معاملات طے کر لیں، جماعت اسلامی کو خوشی ہو گی۔

 

نائب امیر جماعت اسلامی لیاقت بلوچ کا کہنا تھا کہ جماعت اسلامی خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی سے اتحاد نہیں کرے گی، پی ٹی آئی کے ساتھ قومی اور صوبائی سطح پر ایڈجسٹمنٹ کی بات ہوئی تھی صرف ایک صوبے میں اشتراک نہیں کر سکتے۔

 

واضح رہے گزشتہ روز بھی جماعت اسلامی پاکستان خیبرپختونخوا کے امیر رہنما پروفیسر محمد ابراہیم نے پی ٹی آئی کے ساتھ اتحاد کی تردید کی تھی۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی جس کے ساتھ بھی حکومت بنانا چاہے ان کو اختیار ہے۔ جماعت اسلامی کا نام استعمال کرنے کا اخلاقاً کوئی جواز نہیں بنتا۔

 

انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی نے ابھی کوئی فیصلہ نہیں کیا، پی ٹی آئی خود سے ہی حکومت بنانے کے لیے جماعت اسلامی کا نام استعمال کررہی ہے۔ پروفیسر ابراہیم کا کہنا تھا کہ یہ طرزِ عمل نامناسب اور غیر اخلاقی ہے۔ جماعت اسلامی کسی کو کندھا فراہم نہیں کرے گی۔

 

 

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept